Best Ghazal By Nusrat Fateh Ali Khan | Sochta Hoon Ke Woh Kitne Masoom The

Here's the best collection of Urdu Ghazal by Nusrat Fateh Ali Khan. Nowadays a huge WhatsApp, Facebook, Instagram, and other Social Media users in Pakistan search for Urdu Ghazal for his/her Facebook, WhatsApp, Instagram, and other Social Media status so we collect the best collection of Urdu Ghazal for you. This is the best and a most popular collection of Urdu Ghazal by Nusrat Fateh Ali Khan on the internet we already published the collection of best sad poetry in Urdu but in this collection, we collect the best of the best and most popular collection of Urdu Ghazal. You guys give lots of love on our previous collections so we collect this just only for you all, we hope you liked our this collection of Urdu Ghazal.


Best Ghazal By Nusrat Fateh Ali Khan | Sochta Hoon Ke Woh Kitne Masoom The

Best Ghazal By Nusrat Fateh Ali Khan (Urdu Ghazal)

Sochta Hoon Ke Woh Kitne Masoom The 

Jaane wale Hamari mehfil se
Chand taron ko saath leta ja

Hum khizaon se nibah kar lenge
Tu baharon ko saath leta ja

Achchi soorat ko sawarne ki zaroorat kya hai
Saadgi mein bhi kayamat ki Ada hoti hai

Tum Jo aa jaate ho masjid mein Ada Karne namaaz
Tumko maaloom hai kitnon ki kaza hoti hai

Koi hasse to tujhe gham lage
Hassi na lage
Ki dillagi bhi tere dil ko 
Dillagi na lage

Tu roz roya kare uth ke Chand raton mein
Khuda Kare Tera mere bagair ji na lage

Tanhai mein faryaad to kar sakta hoon
Veerane ko aabad to kar sakta hoon

Jab cha hoon tumhein mil nahi sakta Lekin
Jab chahoon tumhein yaad to kar sakta hoon

Koi bhi waqt ho has kar guzar leta hoon
Khizan ke daur mein ehde bahar leta hoon

Gulon se rang sitaron se roshni lekar 
Jamaal e yaar ka naksha utar leta hoon

Uske nazdeek gham e tark e wafa kuch bhi nahi
Mutmayin aise hai wo jaise hua kuch bhi nahi

Ab to hathon se lakeeren bhi miti jaati hain
Usko khokar to mere pass raha kuch bhi nahi

Kal bicharna hai to phir ehde wafa soch ke bandh
Abhi aagaz e mohabbat hai gaya kuch bhi nahi

Main to is waaste chup hoon ki tamasha na bane
Tu samajhta hai mujhe tujhse gila kuch bhi nahi

Sochta hoon ke woh kitne masoom the 
Kya se kya ho gaye dekhte dekhte

Maine patthar se jinko banaya sanam
Wo khuda ho gaye dekhte dekhte 

Jin pattharon ko humne ata ki thi dhadkane
Wo bolne lage to humhi pe baras pare 

Mere hathon se tarashe hue patthar ke sanam
Mere samne hi bhagwan bane baithe hain

Hashar hai wahshat e dil ki awargi
Humse poocho mohabbat ki deewangi

Jo pata poochte the kisi ka bhi
Lapata ho gaye dekhte dekhte

Humse ye soch kar koi wada karo
Ek waade pe umrein guzar jayeng

Ye hai duniya yahan kitne ehle wafa
Bewafa ho gaye dekhte dekhte 

Din chup gaya suraj ka kahin naam nahin hai
O wada shikan ab bhi teri shaam nahi hai

O wada shikan...
Shab e wada ye raha karti hain batein dil se
Dekhein yaar aata hai pehle ki kaza aati hai

Kal se bekal hoon main bhala khaak mujhe kal aaye
Kal ka waada tha na wo aaj aaye na wo kal aaye

Roz ka intezaar kaun kare
Aap ka aitbaar kaun Kare

Ho chuka wada ki kab aayiyega
Dekhiye ab na bhool jayiyega

Bhala koi wada khilafi bhi hadd hai
Hisab apne dil mein laga kar to socho

Kayamat ka din aa gaya rafta rafta
Mulakat ka din badalte badalte

Humse ye Soch kar koi wada karo
Ek waade pe umrein guzar jayengi

Ye hai duniya yahan kitne aehle wafa
Bewafa ho gaye dekhte dekhte

Gair ki baat tasleem kya kijiye
Ab to khud par bhi humko bharosa nahi

Apna saaya samajhte the jinko kabhi
Wo juda ho gaye dekhte dekhte

جانے والے ہماری محفل سے چاند تاروں کو ساتھ لیتا جا
ہم خزاں سے نباہ کر لیں گے تُو بہاروں کو ساتھ لیتا جا

اچھی صورت کو سنورنے کی ضرورت کیا ہے
سادگی میں بھی قیامت کی ادا ہوتی ہے
تم جو آجاتے ہو مسجد میں ادا کرنے نماز
تم کو معلوم ہے کتنوں کی قضا ہوتی ہے

کوئ ہنسے تو تجھے غم لگے ہنسی نہ لگے
کہ دل لگی بھی تجھے دل لگی نہ لگے
تو روز رویا کرے اُٹھ کے چاند راتوں میں
خدا کرے تیرا میرے بغیر جی نہ لگے

تنہائ میں فریاد تو کر سکتا ہوں
ویرانے کو آباد تو کر سکتا ہوں
جب چاہوں تمہیں مِل نہیں سکتا لیکن
جب چاہوں تمہیں یاد تو کر سکتا ہوں

کوئ بھی وقت ہو ہنس کر گزار لیتا ہوں
خزاں کے دور میں عہدِ بہار لیتا ہوں
گُلوں سے رنگ، ستاروں سے روشنی لے کر
جمالِ یار کا نقشہ اُتار لیتا ہوں

اُس کے نذدیک غمِ ترکِ وفا کچھ بھی نہیں
مطمئن ایسے ہے وہ جیسے ہُوا کچھ بھی نہیں
اب تو ہاتھوں سے لکیریں بھی مِٹی جاتی ہیں
اُس کو کھو کر تو میرے پاس رہا کچھ بھی نہیں

کل بچھڑنا ہے تو پھر عہدِ وفا سوچ کے باندھ
ابھی آغازِ محبّت ہے گیا کچھ بھی نہیں
میں تو اس واسطے چپ ہوں کہ تماشا نہ بنے
تُو سمجھتا ہے مجھے تجھ سے گِلا کچھ بھی نہیں

سوچتا ہوں کہ وُہ کتنے معصوم تھے
کیا سے کیا ھو گئے دیکھتے دیکھتے
میں نے پتھر سے جن کو بنایا صنم
وہ خُدا ھو گئے دیکھتے دیکھتے

جِن پتھروں کو ہم نے عطا کی تھی دھڑکنیں
وہ بولنے لگے تو ہمیں پر بَرَس پڑے
میرے ہاتھوں سے تراشے ہُوۓ پتھرکے صنم
میرے ہی سامنے بھگوان بنے بیٹھے ھیں

حشر ہے وحشتِ دل کی آوارگی
ہم سے پوچھو مُحبّت کی دیوانگی
جو پتہ پوچھتے تھے کسی کا کبھی
لاپتہ ہو گئے دیکھتے دیکھتے

ہم سے یہ سوچ کر کوئ وعدہ کرو
ایک وعدے پہ عمریں گزر جائیں گی
یہ ہے دنیا یہاں کتنے اہلِ وفا
بےوفا ہوگئے دیکھتے دیکھتے

دن چھُپ گیا سورج کا کہیں نام نہیں ہے
اَے وعدہ شکن اب بھی تیری شام نہیں ہے
شبِ وعدہ یہ رہا کرتی ہیں باتیں دل سے
دیکھیَے یار آتا ہے پہلے کہ قضا آتی ہی

کل سے بےکل ہوں میں بھلا خاک مجھے کل آئے
کل کا وعدہ تھا، نہ وہ آج آئے نہ وہ کل آئے
روز کا انتظار کون کرے، آپ کا اعتبار کون کرے
ہو چکا وعدہ کہ کب آیئے گا، دیکھیئے اب نہ بھول جایئے گا

بھلا کوئی وعدہ خلافی کی حد ہے
حساب اپنے دل میں لگا کر تو سوچو
قیامت کا دن آ گیا رفتہ رفتہ
 ملاقات کا دن بدلتے بدلتے

ہم سے یہ سوچ کر کوئ وعدہ کرو
ایک وعدے پہ عمریں گزر جائیں گی
یہ ہے دنیا یہاں کتنے اہلِ وفا
بےوفا ہوگئے دیکھتے دیکھتے

غیر کی بات تسلیم کیا کیجیئے
اب تو خُد پر بھی ہم کو بھروسا نہیں
اپنا سایا سمجھتے تھے جن کو کبھی
وہ جُدا ہو گئے دیکھتے  دیکھتے

Conclusion

We hope you also like this collection of best Urdu Ghazal if you can't check our previous collection of best sad poetry in Urdu don't forget to check out we know you like that also and don't forget to show some love for us and share this because it gives us lots of motivation to collect more awesome and amazing Urdu Ghazal.

Post a Comment

Leave Your Comment Here.

Previous Post Next Post